فرانسیسی صدر صرف 15 دن کی مہلت دی دی (فوٹو ، فائل)

فرانسیسی صدر صرف 15 دن کی مہلت دی دی (فوٹو ، فائل)

پیرس: فرانسیسی صدر کو مزید پابند کھانے کی دکانیں بھی پہلے سے زیادہ سخت قوانین متعارف کروانے کی سرگرمی سے مل رہی ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق ، ایمانیول میکچینوں کی بات نہیں ہے۔

اس سے پہلے کی بات یہ ہے کہ میاں مکینوں نے فرنچ کونسل آف مسلم فیتھ کوٹ کے داخلہ کے ساتھ مل کر زندگی سے متعلقہ عمل کو 15 دن کی مہلت دی ہے۔

اس قانون سازی کے بعد سیف ایف سی نینشل کانسل آف امام عذاب دے گی۔ مساجد میاں اماموں کو حکومت کی مرضی کے مطابق اور ہٹایا جاسکے گا ۔چارٹر کا فیصلہ واضح ہونا ضروری ہے کہ اسلام مذہب کوئی سیاسی تحریک نہیں ہے۔

اس چارٹر کے تحت ملک کی میاں بیوی کی غیر قانونی مداخلت کو روکنا نہیں ہے۔ بڑے قوانین کے تحت مسلمانوں کے گھروں میں میان تعلیم پڑھنا بند ہوجاتے ہیں۔

یہ خبر بھی پڑھیں: فرانس میں جامع مسجد انتظامیہ کو قتل کی ہلاکتوں کی دھمکی دے رہی ہے

مسلمان کوئٹی ڈی نمبر پر چل رہے ہیں جس سے ان کی اسکول جانے والی ریکارڈ ہے۔ جو مسلمان والدین کوٹ اسکول میاں نہیں پڑھیں گے وہ 6 ماہ قید اور بھاری جرم ہوں گے۔اس مذہبی بنیادوں میں مذہبی بنیادوں کے اہلکار کی شادی کے سلسلے میں تعزیتی سزائوں کے بارے میں تجزیہ بھی کرنا پڑتا ہے۔

یہ خبربھی پڑھیں: فرانسیسی سیاست دان مسلمانوں کے سر ڈھانپنے پر مکمل پابندی کا موقع

واضح رہے کہ فرانس میں دو ماہ سے فرانس میں آزادانہ نفرت انگیز سلوک کا واقعہ تھا جب وہ مساجد کو بند ہو گیا تھا۔ گستاخانہ خاکوں کے اشارے کے بعد فرانس میں اسلام مخالف اقدامات میں اضافہ ہورہا ہے۔ اس سے پہلے فرانس میں بھی مسلمانوں کی تعداد میں حجاب پہننے والے دیگر مذہبی علامات پر پابندی عائد ہیں۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here