غیرملکی لیگزمین موقع دلانے کے خواب والے لوگ منیجرزکاکاروبار چمک منزل پر
فوٹو: فائل

غیرملکی لیگزمین موقع دلئین کے خوابوں والے لوگ منیجرزکاکاروبار چمک منزل پر
فوٹو: فائل

کولمبو: سری لنکا میں فرسٹ کلاس کرکٹ بزنس ، جعلی پروفائل اسکینڈل میں بڑے انکشافات منظر عام پر آرہے ہیں ، میدان میں کسی بھی طرح کا کوئی کرکٹر کا اسٹیٹس ملنے نہیں ہے ، منیجرز کا کاروبار بھی بہت ہی چمکدار مقام ہے۔

کچھ دیر تک آسٹریلوی میڈیا کے ذریعہ انکشاف ہوا سے سری لنکا کے غیرمعروف کھلاڑیوں نے اسپورٹس ویزے پر آسٹریلیا لایا تلاش کیا ہے ، انھوں نے کلب کرکٹ میں موقع فراہم کرنے کیلیے جعلی فرسٹ کلاس پروفائلز کی تشکیل بھی کی ہے۔

اس سلسلے میں سری لنکا کے ذرائع ابلاغ کی تحقیقات سے متعلق جب وہ انکشاف کرتے ہیں تو ایک کھلاڑی کا یہ بھی معلوم ہوتا ہے کہ وہ اس میدان میں بھی شامل ہے جب اس نے کچل کرکٹر بن لیا ، ایئرفورس اسپورٹس کلب سے تعلق رکھنے والے چوتھورا سمانتھا نے کہا۔ 2018 میں فراڈ فرسٹ کلاس ڈیبیو کیا وہ آسٹریلیا میں کلب کرکٹ کھیلوں کی سکیں ہیں۔

21 جونوری سے 21 جنوری تک کھیلوں کے ٹائر بیگل میں دعویٰ کیا ہوا تھا لیکن اس نے انکشاف کیا تھا کہ اس نے کچھ آفیشلز اور اسکورر کی مدد کی تھی اور خود ان کی پلیئر کی جگہ نہیں تھی۔ کوڈبیو کرنے والا ظاہر ہوتا ہے ، گگل پر بین الاقوامی کرکٹرز ڈیٹا بیس ان کے اسی میچ میں ڈی بی ویو میں داخل ہوتے ہیں۔

جب اس کے بارے میں سری لنکا کرکٹ سے رابطہ ہوا تو اس نے صرف مذاق کرکٹر کا مقابلہ کیا لیکن اس معاملے کی تحقیقات بھی زندہ رہ گئیں۔ دوسری پلیئرز کو غیرملکی لیگز اور ایونٹس میں موقع فراہم کرنے والے لوگوں کو منیجرز کا کاروبار بھی بہت ہی چمکا ہوا تھا ، اس میں منیرجز بھی شامل تھے ، جنہوں نے سری لنکا کے سابقہ ​​بین الاقوامی اسٹارز کے ساتھ منسلک بھی شامل کیا تھا۔ بھاری ڈومات بھی وصول کرتے ہیں۔



Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here